پاک فوج کا سابق ڈی جی آئی ایس آئی اسد درانی کیخلاف تحقیقات کا حکم

راولپنڈی: پاک فوج نے سابق ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل (ر) اسد درانی کے خلاف تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق سابق ڈی جی آئی ایس آئی  لیفٹیننٹ جنرل (ر) اسد درانی اپنی کتاب ’’دا اسپائی کرونیکلز‘‘ کے متنازع مندرجات کی وضاحت کے لیے جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی پیش ہوئے۔

بعد ازاں ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کی جانب سے کی گئی ٹوئٹ کے مطابق لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ اسد درانی کو ان کی کتاب ’’دا اسپائی کرونیکلز‘‘ کے مندرجات سے متعلق وضاحت کے لیے طلب کیا گیا تھا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کی ٹوئٹ کے مطابق معاملے کی تفصیلی تحقیقات کے لیے کورٹ آف انکوائری کا حکم دے دیا گیا ہے جس کی سربراہی حاضر سروس لیفٹیننٹ جنرل کریں گے، اس کے علاوہ اسد درانی کانام ای سی ایل میں ڈالنےکے لیے مجازاتھارٹی سے بھی رابطہ کرلیا گیا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے 25 مئی کو اپنی ٹوئٹ میں کہا تھا کہ اسد درانی نے اپنی کتاب میں بہت سے موضوعات حقائق کے برعکس بیان کیے ہیں، ان کے اس عمل کو فوجی ضابطہ کار کی خلاف ورزی کے طور پر لیا گیا ہے اور ان قوائد کا اطلاق حاضر سروس اور (ریٹائرڈ) تمام فوجی اہلکاروں پر ہوتا ہے۔

واضح رہے کہ سابق ڈی جی آئی ایس آئی جنرل (ر) اسد درانی نے بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ کے سربراہ اے ایس دولت کے ساتھ  ’دا اسپائی کرونیکلز‘ کے نام سے کتاب لکھی ہے جس میں ایبٹ آباد آپریشن، مقبوضہ کشمیر اور کارگل سمیت دیگر معاملات کو بیان کیا گیا ہے۔

Comments
Loading...