Official Web

حکومت کا پیمرا کو ختم کرکے پاکستان میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی بنانے کا اعلان

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی اور پریس کونسل کو ختم کرکے پرنٹ، الیکٹرانک اور سوشل میڈیا کیلئے ایک ہی اتھارٹی بنانے کا اعلان کیا ہے۔

فضل الرحمان پر تنقید

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کے دوران وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کے لیے پارلیمنٹ بوگس ہے اور ووٹ جعلی ہیں لیکن وہ اسی جعلی ووٹوں والی پارلیمنٹ سے ووٹ لے کر صدر بننا چاہتے ہیں۔

’فضل الرحمان پارلیمنٹ کو بوگس کہتے ہیں اسی کے ذریعے صدر بننا چاہتے ہیں‘

وفاقی وزیر اطلاعات نے بتایا کہ میڈیا کے لوگوں کی آراء کے ساتھ فیصلہ کیا ہے کہ پیمرا اور پریس کونسل دونوں کو ختم کررہے ہیں، پاکستان میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی بنارہے ہیں جو نہ صرف الیکٹرانک بلکہ پرنٹ میڈیا اور اس کے ساتھ سوشل میڈیا کو بھی دیکھے گی۔

انہوں نے کہا کہ ان سب چیزوں کے لیے ایک ہی ریگولیٹری اتھارٹی ہونی چاہیے، تمام میڈیا پر ایک ہی قوانین اور سنسر لاگو ہونےچاہئیں، اس سے ریاست کے وسائل بچیں گے، تمام اتھارٹیز کو ضم کرکے پروفیشنلز کی اتھارٹی بنائے گی جس میں میڈیا کے لوگ بھی شامل ہوں گے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھاکہ آنے والے دنوں میں وزارت اطلاعات، ریگولیٹری باڈیز اور پی ٹی وی میں بھی تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں گے، پی ٹی وی میں سنسر شپ ختم کردی گئی ہے، اب لوگ کہتے ہیں کہ پی ٹی وی اپوزیشن کو زیادہ ٹائم دے رہا ہے اس پر اپوزیشن کو ہمارا شکریہ ادا کرنا چاہیے۔

وزیراعظم نے ذاتی تشہیر پر پابندی عائد کردی ہے: وفاقی وزیر اطلاعات

وزیر اطلاعات نے کہا کہ گزشتہ حکومت اشتہاروں پر چل رہی تھی،اشتہارات کاخرچ پوچھنے پر (ن) لیگ نے واک آؤٹ کیا، وزیراعظم نےپابندی لگا دی ہے کہ ذاتی تشہیرپرایک پیسہ بھی خرچ نہیں ہوگا۔

فواد چوہدر ی کا کہنا تھا کہ حکومت ملک کے بڑے مسائل کو دیکھ رہی ہے، وزیراعظم ایوان کو عزت دینے کے لیے پہلے دن ایوان میں آئے جب کہ اکثریت ہونے کے باعـث نوازشریف ایوان میں نہیں آتے تھے، جمہوریت میں حکومت اور اپوزیشن دونوں کی ذمہ داری ہے، اتنی بڑی اپوزیشن ہے اگر کہے گی ہاؤس نہیں چلنے دیں گے تو نہیں چلے گا، ہم نے پہلے دن ہی اپوزیشن سے بات کی تھی، اپوزیشن سے مل کر ہی بات کو آگے بڑھائیں گے۔

Comments
Loading...