Official Web

لاہور کی ممنوعہ شاہراہیں عام ہو گئیں ،عوام کا چیف جسٹس سے اظہار تشکر

عدالت کی جانب سے جاری فہرست میں شامل نہ ہونےوالے مقامات سے بھی رکاوٹیں ہٹا دی گئیں
لاہور( این این آئی) چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاںثاقب نثار کے حکم کے بعد صوبائی دارالحکومت کی ممنوعہ شاہراہیں عام ہو گئیں جس پر عوام نے چیف جسٹس سے اظہار تشکر کیا ہے ، عدالت کی جانب سے جاری فہرست میں شامل نہ ہونے والے مقامات سے بھی رکاوٹیں ہٹا دی گئیں۔ تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے اتوار کے روز سماعت کے بعد اپنے حکم نامے میںجاتی امراء،گورنر ہاﺅ س ،وزیر اعلیٰ کیمپ آفس اور آئی جی آفس سمیت دیگر مقامات سے سکیورٹی کے نام پر کھڑی کی گئی تمام رکاوٹیں ہٹا نے کے احکامات دئیے تھے جن پر حکومت کی جانب سے عدالت کی جانب سے مقررہ وقت سے پہلے ہی عملدرآمد کر دیا گیا ۔پیر کے روز سرکاری و نجی دفاتر ، مارکیٹوں اور دیگر سرگرمیوں کےلئے گھروںسے نکلنے والے عوام نے رکاوٹیں ہٹائے جانے پر خوشگوار حیرت کا اظہار کرتے ہوئے چیف جسٹس سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ ان رکاوٹوں کی وجہ سے کئی کئی گھنٹے ٹریفک جام رہتی تھی جبکہ کئی علاقہ ممنوعہ ہونے کی وجہ سے انہیں طویل راستہ اختیار کرکے منزل مقصود پر پہنچنا پڑتا تھا۔ یہ بھی دیکھنے میں آیا کہ چیف جسٹس کی جانب سے رکاوٹیں ہٹانے کے لئے جاری کی گئی فہرست میں شامل نہ ہونے والے مقامات پر بھی رکھی گئی رکاوٹیں ہٹا دی گئی ہیں ۔ فاضل عدالت کی جانب سے اپنے حکم میںسی اےم کےمپ آفس 180اےچ ماڈل ٹاﺅن ،وزیر اعلیٰ کی رہائشگاہ ،عوامی تحریک کے سربراہ مولانا طاہر القادری کی رہائشگاہ، واپڈ ہاﺅس ، گورنر ہاﺅس ، جامع القادسیہ ، جاتی امراءرائے ونڈ ، آئی جی آفس ، پولےس لائنزقلعہ گجر سنگھ ، انسٹی ٹےوٹ مہاج الحسےن نواب ٹاﺅن ، حافظ سعید کی جوہر ٹاﺅن میں واقع رہائشگاہ ، ےونےورسٹی آف سنٹرل پنجاب، اےوان عدل ، داتا دربا ر، جامعتہ المنتظر ، پاسپورٹ آفس ایبٹ روڈ ، پاسپورٹ آفس گارڈن ٹاﺅن سمیت دیگر مقامات سکیورٹی کے نام پر رکھی گئی رکاوٹیں اور بیرئیر ہٹانے کے احکامات جاری کئے گئے تھے ۔

Comments
Loading...