آغا سراج درانی 8 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

کراچی:  آمدن سے زائد اثاثوں کے الزام میں گرفتار سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کو کراچی کی احتساب عدالت میں پیش کر دیا گیا، نیب حکام نے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی تاہم عدالت نے 8 روزہ ریمانڈ دیا۔ نیب کورٹ کے باہر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔

احتساب عدالت نے آغا سراج درانی کو 8 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر دیا۔ سماعت کے دوران سراج درانی کے وکیل نے نقطہ اٹھایا کہ جو تفصیلات مانگی گئیں وہ فراہم کیں، سراج درانی کے گھر گھس کر جس طرح کارروائی کی گئی وہ افسوسناک ہے۔ آغا سراج بیمار ہیں دوا تک نہیں دی۔ جس پر تفتیشی افسر نے کہا کہ ہمارے پاس ڈاکٹرز موجود ہیں، ملزم کا میڈیکل چیک اپ کروایا ہے۔ تفتیشی افسر نے عدالت سے 14 روزہ ریمانڈ کی درخواست کی تاہم عدالت نے 8 روزہ ریمانڈ پر آغا سراج کو نیب کے حوالے کرتے ہوئے یکم مارچ کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

یاد رہے قومی احتساب بیورو نے سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کو اسلام آباد کے نجی ہوٹل سے گرفتار کیا تھا۔ نيب کراچی نے گزشتہ روز آغا سراج درانی کے گھر پر چھاپہ مارا اور فيملی سے پوچھ گچھ کی، چھاپے کی خبر پر سندھ کابینہ ارکان انکی رہائشگاہ کے باہر جمع ہوگئے اور بھرپور احتجاج کیا۔ گرفتاری پر وزیر اعلی سندھ نے بھی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس آج طلب کر لیا۔ آغا سراج درانی کا نیب آفس میں طبی معائنہ مکمل ہو چکا ہے۔

Comments
Loading...