پاک بھارت کشیدگی کے باوجود حکومت نے وساکھی میلہ شیڈول کی منظوری دیدی

لاہور: پاک بھارت کشیدگی کے باوجود وفاقی حکومت نے خالصہ جنم دن اور  وساکھی میلہ 2019 کے شیڈول کی منظوری دے دی ہے اور 3 ہزار بھارتی یاتریوں کو 10 روزہ یاترا کے لئے ویزہ جاری کیے جائیں گے۔

متروکہ وقف املاک بورڈ کے ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے خالصہ جنم دن اور وساکھی میلے کی تیاریوں کے لیے خصوصی ہدایات جاری کی ہیں۔ متروکہ وقف املاک بورڈ حکام نے سکھ یاتریوں کو طعام، قیام کے ساتھ ساتھ علاج معالجہ اور سفری سہولیات کی مفت فراہمی کے لئے تیاریاں شروع کر دیں ہیں۔

بھارتی سکھ یاتری 12 اپریل کو خصوصی ٹرینوں کے ذریعے پاکستان آئیں گے، واہگہ ریلوے اسٹیشن پر اعلی حکام ان کا استقبال کریں گے۔ اسی رات سکھ یاتریوں کوخصوصی ٹرنیوں کے ذریعے گوردوارہ پنجہ صاحب حسن ابدال پہنچایا جائے گا، جہاں 14اپریل کو بھوگ اکھنڈ پاٹھ صاحب کی مرکزی تقریب ہوگی۔

بھارت سمیت دنیا بھر سے آئے ہوئے سکھ یاتری چودہ اپریل کو ہی ”خالصہ جنم دن“ کی خوشی بھی منائیں گے، 15 اپریل کو سکھ یاتری گوردوارہ جنم استھان روانہ ہو ں گے، 17 اپریل کو گوردوارہ سچا سودا فاروق آباد کا دورہ کریں گے۔

18 اپریل کو یاتری خصوصی ٹرین کے ذریعے گوردوارہ شری ڈیرہ صاحب لاہور پہنچیں گے، 19 اپریل کو سکھ یاتری گوردوارہ دربار صاحب کرتار پور، نارووال کے علاوہ گوردوارہ روہڑی صاحب ایمن آباد، ضلع گوجرانوالہ کی یاترا کے لئے جائیں گے۔ بھارتی سکھ یاتری 20 اپریل کو لاہور کی سیر کریں گے، اور 21 اپریل کو بھارت واپس چلے جائیں گے۔

Comments
Loading...