روس کا نئے بین البراعظمی بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

روس نے نئے بین البراعظمی بیلسٹک میزائل(Sarmat) کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق روسی فوج نے بدھ کے روز اعلان کیا کہ اس نے ایک نئے بین البراعظمی بیلسٹک میزائل کا پہلا کامیاب تجربہ  کرلیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق یہ میزائل پورے فرانس جتنے علاقے کو تباہ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ریکارڈ اٹھارہ ہزار کلو میٹر تک ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔

روسی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ سرمت دنیا کا سب سے طاقتور میزائل ہے ،جس کی رینج سب سے زیادہ ہے اور یہ ہماری اسٹریٹجک نیوکلیئر فورسز کی صلاحیت میں نمایاں اضافہ کرے گا۔

وزارت نے کہا کہ سرمت دیگر قسم کے وار ہیڈز کے ساتھ ہائپرسونک گلائیڈ گاڑیاں لے جانے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق روسی صدر ولادمیر پیوٹن کا کہنا ہے کہ یہ میزائل ایک ایسا اسٹریٹیجک ہتھیار ہے جس کا کوئی ثانی نہیں جبکہ یہ مغربی ملکوں کو  روس کے خلاف کوئی بھی جارحانہ  اقدام  اٹھانے سے قبل دوبار سوچنے پرمجبور کر دے گا۔

دوسری جانب امریکی محکمہ دفاع  پینٹاگون کا کہنا ہےکہ روس کا میزائل تجربہ امریکا اور اس کے اتحادیوں کے لیے خطرے کا باعث نہیں۔

Comments
Loading...