امیتابھ نے اپنے دیرینہ ساتھی گووندا کو ‘تھپڑ’ جڑنے کی دھمکی کیوں دی؟

بالی وڈ میں جہاں ہیرو ہیروئن کی جوڑی کے خوب چرچے رہتے ہیں وہیں ماضی میں کئی فلموں میں ساتھ اداکاری کے جوہر دکھانے والی جوڑی گووندا اور امیتابھ بچن کے بھی ان گنت پرستار موجود ہیں۔

ان دنوں بھارتی میڈیا پر دونوں کے ماضی کا ایک یادگار قصہ موضوعِ بحث جس سے یقیناً بہت سے لوگ ناواقف ہوں گے۔

اکتوبر 1998 میں ریلیز ہونے والی سپر ہٹ فلم ‘بڑے میاں چھوٹے میاں’ سے متعلق گووندا نے اپنے ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ  ایک مخصوص گانے کی عکسبندی سے قبل امیتابھ بچن میرے پاس آئے اور  دھمکی دی کہ اگر یہ فلم باکس آفس پر نہیں چلی تو وہ انہیں تھپڑ ماریں گے۔

اداکار نے مزید بتایا کہ میں امیتابھ بچن کی اس دھمکی سے حقیقتاً ڈر گیا تھا اور میں نے اسی وجہ سے شوٹنگ منسوخ کردی تھی۔

بھارتی ویب سائٹ کے مطابق دراصل گووندا فلم میں اس نوعیت کے کسی گانے کے حق میں نہیں تھے، گووندا کے مطابق  اس طرح کا سین لوگوں کو پسند نہیں آئے گا جس کی وجہ سے شوٹنگ میں بھی تاخیر ہوئی۔

دوران انٹرویو گووندا نے بتایا کہ  ہدایتکار ڈیوڈ دھون ان کے پاس آئے اور  پوچھا کہ آپ کو اتنا یقین کیوں ہے کہ یہ گانا نہیں چلے گا۔

اس وقت گووندا نے جواب دیا کہ امیت جی نے مجھے تھپڑ مارنے کی دھمکی دی ہے جس کے بعد ان دونوں نے فیصلہ کیا کہ یہ گانا صحیح نہیں ہے۔

سپر اسٹار نے مزید بتایا بعد ازاں ان کی ٹیم نے فیصلہ کیا جب تک فلم کے لیے کوئی اچھا گانا نہیں مل جاتا وہ شوٹنگ نہیں کریں گے۔

Comments
Loading...