روپیہ بدترین گراوٹ کا شکار، امریکی ڈالر کی قدر میں بڑا اضافہ

لاہور:  ملک بھر میں عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کے ساتھ پروگرام میں تاخیر کے باعث ملکی کرنسی بدترین گراوٹ کی طرف گامزن ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق رواں ہفتے کے دوسرے کاروباری روز کے دوران انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قیمت میں ایک مرتبہ پھر ایک روپیہ 13 پیسے کا بڑا اضافہ دیکھا گیا۔

اعداد و شمار کے مطابق انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قیمت 187 رپے 53 پیسے سے بڑھ کر 188 روپے 66 پیسے سے ہو گئی ہے۔

اُدھر اوپن مارکیٹ میں ڈالر 1روپے مہنگا ہوگیا، اوپن مارکیٹ میں ڈالر 189روپے 30پیسے کا ہوگیا۔

16اپریل سے اب تک ڈالر 7روپے سے زائد مہنگا ہو چکا ہے، 16اپریل کو ڈالر181روپے 55 پیسے پرتھا ڈالر کی قدر بڑھنے سے قرضوں کے بوجھ میں 930ارب کا اضافہ ہو گیا ہے۔

دوسری طرف پاکستان سٹاک مارکیٹ میں اُتار چڑھاؤ کے بعد 111.22 پوائنٹس کی تیزی ریکارڈ کی گئی، 100 انڈیکس 43504.36 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ کر بند ہوا، پورے کاروباری روز کے دوران کاروبار میں 0.26 فیصد کی بہتری دیکھی گئی جبکہ 11 کروڑ 44 لاکھ 8 ہزار 887 شیئرز کا لین دین ہوا، تیزی کے باعث سرمایہ کاروں کو بیس ارب روپے سے زائد کا فائدہ ہوا۔

Comments
Loading...