کابینہ کا سزا یافتہ شخص سے ملنے لندن جانا پاکستان کی توہین ہے، عمران خان

جہلم: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ اربوں روپے کرپشن کیسز میں مفرور شخص نواز شریف کی طلبی پر وفاقی کابینہ کا لندن جانا پاکستان کی توہین ہے۔

جہلم میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا کہ کابینہ کے لوگ عوام کے پیسوں پر لندن جاکر وہاں بیٹھے سزایافتہ شخص اور مجرم سے ہدایت لیں گے، یہ پاکستان کی توہین ہے اور اب غیور قوم اس کے خلاف کھڑی ہوگئی ہے۔

’مریم نواز اور بڑا بھائی فوج کے خلاف بیان دیتا ہے جبکہ چھوٹا بھائی بوٹ پالش کرتا ہے‘

مسلم لیگ ن کی قیادت پر تنقید کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ’مریم نواز اور بڑا بھائی فوج کے خلاف بیان دیتا ہے اور چھوٹا بھائی بوٹ پالش کرتا ہے، شہباز شریف شرم کرو، میں نے جس میر جعفر کا ذکر کیا وہ تم ہو کیونکہ جیسے انگریزوں نے میر جعفر کو اقتدار پہ بٹھایا ویسے ہی امریکا نے تمھیں اقتدار پر بٹھایا‘۔

’سندھ کو زرداری سے آزاد کراؤں گا‘

عمران خان نے آصف زرداری کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’جب گیدڑ کی موت آتی ہے وہ شہر کا رخ کرتا ہے، میں سندھ کو آزاد کراؤں گا، تم نے سندھ کو لوٹا، ظلم کیا  اور جہاز بھر بھر کے پیسے ، ڈالرز باہر بھیجے، میں اب سندھ آرہا ہوں‘۔

’عوام کے درمیان آکر آزاد ہوگیا‘

پی ٹی آئی چیئرمین نے ایک بار پھر کہا کہ ’میں نے پہلے ہی کہہ دیا تھا کہ اقتدار سے نکل کر زیادہ خطرناک ہوجاؤں گا کیونکہ وہاں دفتر میں کام کی مصروفیات زیادہ تھیں، بیٹھ بیٹھ کر میرا وزن بھی بڑھ گیا ہے، خدا کا شکر ہے کہ اب میں دوبارہ عوام کے درمیان آکر آزاد ہوگیا ہوں‘۔

بھارت نے ڈس انفارمیشن لیب بنا کر فوج اور عمران خان کو نشانہ بنایا‘

انہوں نے کہا کہ ’بھارت نے ای یو ڈس انفارمیشن لیب بنایا جس نے پاکستان پر تنقید کی، پاکستانی فوج اور مجھے نشانہ بنایا، اُن کی خواہش ہے کہ  پاکستان کو تین ٹکڑے ہوجائے، بلوچستان میں دہشت گردی کا مقصد بھی پاکستان کو توڑنا ہے مگر پی ٹی آئی اور فوج کے ہوتے ہوئے پاکستان کو کوئی نقصان نہیں پہنچا سکتا‘۔

عمران خان نے کہا کہ ’شہباز شریف کہتا ہے میں فوج کے خلاف بیان دیتا ہوں، میرا سب کچھ پاکستان میں ہے اور جو کمایا تھا وہ سب فروخت کر کے ملک لے آیا، میں بھاگ کر کہیں نہیں جاؤں گا، میں تو کہتا ہوں ای سی ایل میں ڈال دو کیونکہ میں باہرجانا نہیں چاہتا‘۔

’روس ہمیں تیس فیصد کم قیمت میں تیل اور گندم دینے پر راضی ہوگیا تھا مگر کیا اب شہباز شریف ماسکو سے بات کرسکتے ہیں؟ وہ ایسا نہیں کرسکتے کیونکہ اس کے لیے شہبازشریف کو امریکا سے اجازت لینا ہوگی‘۔

انہوں نے کہا کہ ’میرے دور میں مودی کی ہمت نہیں تھی کہ وہ پاک فوج کے خلاف بات کرے، ذوالفقار علی بھٹو عوام کے لیے کھڑا ہوا تو اس کے خلاف بھی سازش ہوئی، جس میں فضل الرحمان اور نوازشریف شریک تھے‘۔

شاہ محمود قریشی کا جہلم جلسہ سے خطاب

سابق وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے جلسے میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جہلم شہیدوں، غازیوں اور محافظوں کا شہر ہے، یہاں کے لوگ بتائیں کہ مراسلہ جھوٹا ہے یا سچا، شہباز شریف آج تمھیں عمران خان کے چرنوں میں بیٹھ جانا چاہیے تھا۔

انہوں نے کہا کہ اگر مراسلے میں سچائی نہیں تھی تو امریکی سفیر کے سامنے احتجاج کیوں کیا گیا، سازش تو نہیں تھی مداخلت تھی اور مداخلت کے ساتھ دھمکی بھی تھی، اس دھمکی کے خوف پر مبتلا ہوکرتم نے امریکی حکم پر عمل کیا مگر قوم کسی بیرونی دھمکی سے خوف زدہ نہیں ہوا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیر خارجہ بلاول بھٹو نے دعویٰ کیا کہ یہ مراسلہ وزارت خارجہ میں بھرا گیا، جس کابینہ کا تم حصہ ہو تو کیوں انکوائری کمیشن کا اعلان کیا، امپورٹڈ وزیرخارجہ سے پوچھتا ہوں آج مسجد اقصیٰ پر حملہ ہوا کیا تم نے کوئی بیان دیا اور نہ مذمت کی۔

انہوں نے کہا کہ ’پورا پاکستان پانی کے لیے ترس رہا ہے، ہندوستان کہتا ہے کہ پانی کے مسئلے پر کوئی بات کرنے کو تیار نہیں، ہماری وزیر مملکت حنا ربانی کھر ایک لفظ ادا نہیں کرتی‘۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ پاکستان میں گندم اور آٹے کا بحران آنے والا ہے، اس بار ہماری حکومت سے 3 ملین ٹن پیدوار کم ہے، عمران نے روس سے زیادہ گندم خریدنےکا بندوبست کیا مگر امپورٹڈ حکومت نے کوئی اقدامات نہیں کیے، ان کی حکومت میں بجلی کے نرخ بڑھ گے، مہنگائی بڑھ گئی۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ یہ 25 لوٹے (منحرف اراکین) عنقریب فارغ ہونے والے ہیں۔

فواد حسین چوہدری کا جہلم جلسہ سے خطاب

فواد چوہدری نے کہا کہ پاکستان کے لوگ مختلف طریقوں سے ملک کی خدمت کرتے ہیں، یہاں کے لوگ پاکستان کی بنیادوں میں اپنا لہو دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے جہلم کو دو رویا سڑک اور نہر کا تحفہ دیا مگر آج جہلم کے لوگ عمران خان کے ساتھ اس لیے کھڑے ہیں کہ وہ حرمت رسول ﷺ کے لیے کھڑا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے اقتدار اعلی کا فیصلہ واشنگٹن نہیں پاکستان کے لوگوں نے کرنا ہے، عمران خان ہماری امید ہیں اور عوام کا نمائندہ عمران خان ہیں، عوام عمران خان کی قیادت میں متحد ہیں، کسی امپورٹڈ حکومت اور چیری بلاسم کو ہم نہیں مانتے، آج پاکستان میں ان ڈاکوں کو این آر او 2 دیا جارہا ہے۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ پاکستان کی خودمختاری کے لیے کوئی ایک بھی چہرہ موجود نہیں، اب ایوان لرز جائیں گے اور راج کرے گی خلق خدا۔

Comments
Loading...