سہ ملکی ہاکی کے لیے21 رکنی اسکواڈ منتخب، رضوان سینئر قیادت کریں گے

کراچی: سہ ملکی ہاکی ٹورنامنٹ کے لیے21 رکنی پاکستانی ٹیم کا اعلان کر دیا گیا جس کی قیادت رضوان سینئر کریں گے جبکہ ارسلان قادر نائب ہوں گے۔

سہ ملکی ہاکی ٹورنامنٹ کے لیے جمعرات کو پاکستان کی 21 رکنی ٹیم کا اعلان کر دیا گیا۔ قومی ٹیم کا اعلان کراچی کے عبدالستار ایدھی ہاکی اسٹیڈیم پر 2 روزہ ٹرائلز کے اختتام پر پی ایچ ایف کی سلیکشن کمیٹی کے چیئرمین وسابق قومی کپتان اولمپئن اصلاح الدین نے کیا۔

کمیٹی کے ارکان اولمپئن ایاز خان، اولمپئن فرحت خان اور اولمپئن مصدق حسین نے ان کے ہمراہ کھلاڑیوں کی کارکردگی کا جائزہ لیا، قومی سلیکٹر اولمپئن قاسم خان دوسرے دن بھی ٹرائلز دیکھنے کے لیے اسٹیڈیم نہیں پہنچے۔

پی ایچ ایف کے صدر بریگیڈیئر ریٹائرڈ خالد سجاد کھوکھر اورسیکریٹری اولمپئن شہباز احمد سینئر نے بھی کھلاڑیوں کی اہلیت کا مشاہدہ کیا، ان ٹرائلز میں قومی کیمپ میں شریک 39 کھلاڑیوں نے اپنی اہلیت دکھانے کی کوشش کی تاہم قومی سلیکشن کمیٹی نے ملائیشیا میں ہاکی لیگ میں شرکت کے سبب قومی کیمپ میں نہ آنے والے 2 کھلاڑیوں عماد شکیل بٹ اوراظفر یعقوب کو بھی پاکستان ٹیم کا حصہ بنالیا۔

مالی مشکلات کی شکار پی ایچ ایف نے ٹورنامنٹ کے لیے 25 کے بجائے 21 کھلاڑیوں کو ہی دورے کے لیے منتخب کیا، ہیڈ کوچ و منیجر اولمپئن حسن سردار کی معاونت کوچز اولمپئن محمد ثقلین اورریحان بٹ کریں گے، اولمپئن گول کیپر شاہد علی خان گول کیپنگ کوچ ہوں گے۔

ٹورنامنٹ کے لیے قومی ہاکی ٹیم عمران بٹ، مبشر علی، رضوان جونیئر،تصور عباس، فرید احمد، ابو بکرمحمود، فرید احمد، توثیق ارشد، عمر بھٹہ، رضوان سینئر (کپتان)،ارسلان قادر (نائب کپتان)،شفقت رسول ، امجد علی، فیصل قادر، عمادشکیل بٹ،اظفر یعقوب،اعجاز احمد، عاطف مشتاق، علی شان، عتیق ارشد، شجیع احمد اور تنظیم الحسن پر مشتمل ہوگی۔

چیف سلیکٹر نے 5 اسٹینڈ بائی کھلاڑیوں کے بھی ناموں کا اعلان کیا، ان میں مظہر عباس، جنید کمال، علیم بلال، سمیع اللہ اور خضر اختر شامل ہیں۔ منتخب ٹیم اپنی منزل پر روانگی سے قبل مختصر کیمپ میں مزید ٹریننگ کرے گی۔

دریں اثنا نامزد قومی کپتان رضوان سینئر نے کہاکہ میں اپنے انتخاب اور اعتماد پر قومی فیڈریشن کا شکر گزار ہوں، ٹورنامنٹ میں کامیابی کے لیے کوئی بلند بانگ دعویٰ نہیں کرسکتا لیکن اچھی کارکردگی پیش کرنے کی کوشش ہوگی، ڈبل لیگ کی بنیاد پر ہونے والے ٹورنامنٹ میں جاپان کی ٹیم سے مقابلے آسان نہیں ہوں گے۔

Comments
Loading...