ایک سال :نیشنل سیونگ سکیم کی شرح منافع میں رد و بدل نہ ہوسکا

سکیم کی جانب سے شرح منافع کو پرانے ریٹ پر ہی برقرار رکھا گیا ہے ، بیوائوں اور پنشنرز کو شدید پریشانی کا سامنا

کراچی : ایک سال گذرجانے کے باوجود نیشنل سیونگ سکیم کے شرح منافع میں کوئی رد و بدل نہ ہوسکا، بچت سکیموں کا شرح منافع پرانے ریٹ پر ہی برقرار ہے۔ بیوائوں اور پنشنرز کی اُمیدوں پر پانی پھر گیا کیونکہ نیشنل سیونگ سکیم نے شرح منافع کو پرانے ریٹ پر ہی برقرار رکھا ہے۔ پیشنر اور بہبود سرٹیفیکیٹ کا شرح منافع 9 اعشاریہ 36 فیصد یعنی ایک لاکھ کی سرمایہ کاری کرنے والوں کواب بھی سالانہ 9 ہزار 360 روپے ہی ملا کریں گے۔

دوسری جانب ڈیفنس سیونگ سرٹیفیکٹ کا شرح منافع 7 اعشاریہ 54 فیصد، ریگولر انکم سرٹیفیکیٹ کا شرح منافع 9 اعشاریہ 36 فیصد اور سپیشل سیونگ سکیم کا شرح منافع 6 اعشاریہ 03 فیصد پر ہی برقرار ہے، جبکہ بجٹ اکائونٹ میں سرمایہ لگانے والوں کو 3 اعشاریہ 95 فیصد منافع ملے گا۔ واضح رہے کہ حکومت نے گذشتہ ایک برس سے بچت سکیموں کے شرح منافع کوئی تبدیلی نہیں کی ہے۔

Comments
Loading...