احد چیمہ کے خلاف نیب کے پاس ٹھوس شواہد موجود ہیں، ترجمان نیب

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو کے ترجمان نے کہا ہے کہ احد چیمہ کو قانون کے مطابق گرفتار کیا گیا، ان کے خلاف نیب کے پاس ٹھوس شواہد موجود ہیں۔

تفصیلات کے مطابق نیب لاہور نے آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم میں بدعنوانی میں ملوث سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ کو گرفتار کیا تھا جس کے بعد وہ کرپشن ریفرنس میں 11 دن کے ریمانڈ پر نیب کی تحویل میں ہیں۔

ترجمان نیب کا کہنا ہے کہ ریمانڈ ختم ہونے پر عدالت میں رپورٹ پیش کی جائے گی، نیب کسی کے ساتھ امتیازی سلوک نہیں کرے گا، تمام اقدامات قانون کے مطابق ہوں گے، دھمکی، سرزنش، احتجاج کو قانون کی راہ میں رکارٹ نہیں بننے دیں گے۔

ترجمان کے مطابق کوئی کچھ بھی کہے جواب احتساب عدالت میں دیں گے، ہم کسی کے ساتھ امتیازی سلوک نہیں کریں گے، انتہائی نامساعد حالات کے باوجود آئین اور قانون کے دائرے میں کام کرتے رہیں گے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ احد چیمہ کی حفاظت اور متعلقہ ریکارڈ کے تحفظ کے لیے نیب لاہور میں رینجرز کی تعیناتی ضروری ہے، نیب کا کسی سیاسی جماعت یا گروپ سے کوئی تعلق نہیں۔

واضح رہے کہ احد چیمہ پنجاب حکومت کے طاقتور افسر شمار کیے جاتے ہیں، یہ اس وقت ڈی جی ایل ڈی اے تھے جب آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم میں پڑے پییمانے پر اربوں روپے کی کرپشن کی گئی، جس کی نیب تحقیقات کر رہا ہے۔

احد چیمہ کے انکشاف پر قریبی عزیز شاہد شفیق گرفتار

تفصیلات کے مطابق آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکینڈل میں مرکزی ملزم احد چیمہ کی گرفتار کے بعد اب نیب اہکاروں نے قریبی عزیر شاہد شفیق کو گرفتار کر لیا ہے۔

گرفتار ملزم شاہد شفیق پیرا گون سوسائٹی کے چیف ایگزیکٹو کا قریبی ساتھی ہے، جسے نیب نے احد چیمہ کے انکشاف پر گرفتار کیا ہے۔

Comments
Loading...