مقبوضہ کشمیر : بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں نوجوانوں کی شہادت پر آج مکمل ہڑتال ،مظاہرے روکنے کیلئے سرینگر میں سخت پابندیاںنافذ، شہید نوجوان آبائی علاقوں میں سپرد خاک

سرینگر ۔ 28 جنوری (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں ضلع شوپیاں میں دو نوجوانوں کی شہادت پر آج مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال ہے۔ بھارتی فوجےوں نے ہفتے کے روز ضلع شوپےان کے علاقے گنو پورہ مےں پرامن مظاہرےن پر فائرنگ کرکے دو نوجوانوں جاوید احمد اور سہیل احمد کو شہیدجبکہ متعدد کو زخمی کردےاتھا۔ہڑتال کی کال سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ مزاحمتی قیادت نے دی ہے۔ سرینگر ، شوپیاں اور دیگر قصبوں میں دکانیں اور کاروباری مراکز بند ہیں جبکہ سڑکوں پر ٹریفک کی آمد و رفت معطل ہے۔ دریں اثنا کٹھ پتلی انتظامیہ نے نوجوانوں کی شہادت پر احتجاجی مظاہرے روکنے کیلئے سرینگر کے نوہٹہ، خانیار، رینہ واری، کرال کھڈ، مائسمہ، مہاراج گنج اور صفہ کدل تھانوںکی حدود میں آنے والے علاقوں میں سخت پابندیاں نافذ کر دی ہیں۔انتظامیہ نے لوگوں کو تازہ ترین صورتحال کے بارے میں ایک دوسرے کو معلومات کی فراہمی سے روکنے کیلئے مقبوضہ وادی میں میںموبائل فون اور انٹرنیٹ سروسز بھی معطل کر دی ہیں۔ شہید نوجوانوں سہیل احمد اور جاوید احمد کو اپنے آبائی علاقوں بالپورہ اور گوانپورہ میںسپرد خاک کیا گیا۔ان کی نماز جنازہ میں ہزاروں لوگ شریک تھے جنہیں نے اس موقع پر بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں فلک شگاف نعرے لگائے۔

Comments
Loading...